بابرغوری کے خلاف ریفرنس سماعت کے لیے منظور،احتساب عدالت نے گرفتاری کا حکم دے دیا  

شخصیت ویب ڈیسک 

 سابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ پر2012 میں کے پی ٹی میں 940 غیر قانونی بھرتیوں کا الزام ہے

  غیرقانونی بھرتیوں سے قومی خزانے کو 2 ارب 88 کروڑ 55 لاکھ کا نقصان پہنچایا گیا، ریفرنس میں دیگر 8ملزمان بھی شامل

 قومی احتساب بیورو (نیب) نے ایم کیو ایم کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر بابر غوری کے خلاف کرپشن کا ریفرنس دائر کردیا، ان پر 3 ارب روپے سے زائد کی کرپشن کا الزام ہے۔ احتساب عدالت نے ریفرنس سماعت کے لیے منظور کر لیا۔ احتساب عدالت نے ایم کیو ایم کے رہنما بابر غوری کے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرکے پیش کرنے کا بھی حکم جاری کیا۔ نیب کی جانب سے دائر ریفرنس میں بابر غوری کے علاوہ دیگر8 ملزمان میں رو ¿ف اختر فاروقی ایم کیوایم کے رکن اسمبلی سابق چیئرمین کے پی ٹی جاوید حنیف شامل ہیں۔ریفرنس کے مطابق ملزمان پر 2012 میں کراچی پورٹ ٹرسٹ (کے پی ٹی) 940 غیر قانونی بھرتیوں کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کو 2 ارب 88کروڑ 55 لاکھ کا نقصان پہنچایا گیا۔ اس سے قبل بھی نیب کی جانب سے سابق وفاقی وزیر بابر خان غوری کے خلاف غیر قانونی بھرتیوں پر تحقیقات شروع کی گئی تھیں، اس وقت ان پر تین ہزار ملازمین غیر قانونی طور پر بھرتی کرانے کا الزام تھا۔بابر غوری پیپلزپارٹی کے مخلوط دور حکومت میں وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ رہ چکے ہیں، ان کا شمار ایم کیوایم کے دیرینہ رہنماو ¿ں میں ہوتا ہے اور وہ طویل عرصے سے بیرون ملک مقیم ہیں۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.