سپریم کورٹ کا کراچی میں سرکلرریلوے کو فوری بحال کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کا کراچی بھر میں قبضہ کی گئی ریلوے کی زمینوں کو واگزار کروانے کا حکم۔
شہر کے تمام علاقوں سے تجاوزات ختم کی جائیں۔ کراچی سرکلر ریلوے کو فوری بحال
کرنے کی فوری ہدایت

سپریم کورٹ نے کراچی سرکلرریلوے اورٹرام لائن کوفوری بحال کرنے کاحکم دے دیا۔ عدالت نے ریلوے لائن کوقبضہ مافیاسے کلیئر کرانے کی ہدایت بھی کی ہے۔ ہفتے کوسپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں اجلاس منعقد ہوا،
اجلاس میں عدالت نے حکم دیاکہ کراچی بھر میں قبضہ کی گئی ریلوے کی زمینوں کو واگزار کروا کر کراچی سرکلر ریلوے کو فوری بحال کیا جائے جس پر ڈی ایس ریلوے نے بتایا کہ بیشترعلاقوں میں ریلوے کی زمینوں پر قبضہ ہے۔
عدالت نے ڈپٹی کمشنرز کے ذریعے تمام علاقوں سے ریلوے لائن کلیئرکرانے کی ہدایت جاری کی۔اس کے علاوہ سپریم کورٹ نے ٹرام لائن کی بحالی کابھی حکم دیتے ہوئے کہا کہ سیاحتی مقاصدکیلئے صدر سے اولڈ سٹی ایریا تک ٹرام چلائی جائے۔
کے ایم سی اور ضلعی انتظامیہ کی مدد سے بوگیاں تیارکرنے کی ہدایت بھی کی۔ اس حوالے سے ذرائع نے بتایاکہ مقامی انتظامیہ ریلوے کی مدد سے سرکلرریلوے کے روٹ کا تعین کرے گی۔
سپریم کورٹ نے تجاوزات کے خلاف آپریشن پورے شہرمیں تیزکرنے کی ہدایت دیتے ہوئے واضح حکم دیا کہ اب کراچی میں کوئی تجاوزات نظرنہ آئے۔
ایف ٹی سی پل کے نیچے تعمیر کی گئی دکانیں مسمار اس کے علاوہ شارع فیصل اورراشد منہاس روڈ پر ہرطرح کی تجاوزات ختم کی جائیں۔ عدالت نے تمام کنٹونمنٹ بورڈزاورڈی ایچ اے کوبھی تجاوزات ختم کرنے کاحکم دیا۔

Facebook Comments