منی لانڈرنگ کیس،زرداری اور اومنی گروپس کے اثاثے منجمد کرنے کی سفارش

منی لانڈرنگ کیس،بلاول ہاؤس کراچی ،لاہور اور زرداری ہاؤس اسلام آباد سیل کیا جائے،جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ میں جمع کرادی گئی

منی لانڈرنگ کیس کی جے آئی ٹی نے فریال تالپور،آصف زرداری اوراومنی گروپس کی ملک اور بیرون ملک جائیدادیں منجمد کرنے کی سفارش کردی،بلاول ہاؤس کراچی ،لاہور اور زرداری ہاؤس اسلام آباد سیل کیا جائے،رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی گئی۔تفصیلات کے مطابق جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں آصف زرداری اور بلاول بھٹو کیلئے نئی مشکل آن پڑی،منی لانڈرنگ کیس کی جے آئی ٹی نے عدالت عظمیٰ سے بلاول ہاؤس کراچی ،لاہور اور زرداری ہاؤس اسلام آباد سیل کرنے کی سفارش کردی ہے۔فریال تالپور، زرداری اور اومنی گروپس کی ملک اور بیرون ملک جائیدادیں بھی منجمد کرنے کی سفارش کی گئی ہے، اس سلسلے میں جےآئی ٹی نے سپریم کورٹ میں رپورٹ جمع کرادی ہے۔اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی رپورٹ میں زرداری گروپ، اومنی گروپ کے اثاثوں اور قرضوں میں بے ضابطگیوں کا انکشاف کیا گیا ہے، دونوں گروپس نے حکومتی فنڈز میں بے ضابطگیاں کیں، کمیشن لیا اور غیرقانونی پیسہ ہنڈی کے ذریعے بیرون ملک منتقل کیا۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ زرداری اور اومنی گروپس کے مختلف کمپنیوں کے تحت رکھے گئے اثاثے احتساب عدالت کے فیصلے تک منجمد کئے جائیں، غالب گمان ہے کہ کہیں یہ اثاثے اس سے قبل ہی بیرون ملک منتقل نہ ہوجائیں۔جے آئی ٹی نے جن اثاثوں کو منجمد کرنے کی سفارش کی ہے اس میں بلاول ہاﺅس کراچی و لاہور اور زرداری ہاﺅس اسلام آباد ،آصف زرداری کی نیویارک اور دبئی کی پراپرٹیز،بلاول ہاﺅس کراچی کے پانچوں پلاٹس،اومنی گروپ کی شوگر ملز،زرعی کمپنیز اور توانائی کمپنیز کے اثاثے شامل ہیں۔

Facebook Comments