کرکٹ ورلڈ کپ 2019، پاکستان کا ورلڈ کپ 92کی طرح ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں شکست سے آغاز

کرکٹ ورلڈ کپ 2019، پاکستان کا ورلڈ کپ 92کی طرح ویسٹ انڈیز کے ہاتھوں شکست سے آغاز

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں ویسٹ انڈیز نے اپنے پہلے ہی میچ میں شاہینوں کو آﺅ ٹ کلاس کردیا۔ 92کے ورلڈ کپ کی طرح اس بار

بھی ویسٹ انڈیز کا پلہ بھاری رہا اورانھوں نے پاکستان ٹیم کو 7 وکٹوں سے شکست دے دی۔

ورلڈ کپ 2019 کے افتتاحی میچ میں ویسٹ انڈیز نے پاکستان کو 7 وکٹوں سے شکست دے دی۔ پاکستان کی جانب سے ویسٹ کو جیت کے لیے دیا جانے والا 106 رنز کا ہدف، پاکستان کا ورلڈ کپ میں دوسرا کم ترین اسکور ہے۔
ویسٹ انڈین ٹیم نے پاکستان کا 106 رنز کا ہدف تین وکٹوں کے نقصان پر 13 اعشاریہ 4 اوورز میںپورا کرلیا۔ کیریبیئن سائڈ کے نکولس پورن نے چھکا مار کر میچ کا اختتام کیا۔ کرس گیل 50 رنز بنا کر فاتح ٹیم کی جانب سے نمایاں رہے جبکہ نکولس پورن نے 34 رنز کی اننگ کھیلی۔ ویسٹ انڈیز کے تینوں کھلاڑیوں کو پاکستان کے سٹار باﺅلر محمد عامر نے آﺅٹ کیا۔
خیال رہے کہ 1992 کے ورلڈ کپ میں پاکستان اور ویسٹ انڈیز نے ایک دوسرے سے پنجہ آزمائی کے ذریعے ورلڈکپ کے سفر کا آغاز کیا تھا۔ اس میچ میں برائن لارا کے ریٹائرڈ ہرٹ ہونے کے باوجود ویسٹ انڈیز نے گرین شرٹس کو 10 وکٹوں سے شکست دی تھی۔
قبل ازیں ٹرینٹ برج نوٹنگھم میں کھیلے گئے میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی تو پاکستانی شاہین ریت کی طرح بکھرتے چلے گئے۔

ورلڈ کپ 2019 پاکستان کرکٹ تیم کے اوپنر امام الحق اور فخر زمان اننگ کا آغازکرنے کی خاطرمیدان میں اترنے کے لیے امپائرکے اشارے کے منتظر ہیں

ورلڈ کپ 2019 پاکستان کرکٹ تیم کے اوپنر امام الحق اور فخر زمان اننگ کا آغازکرنے کی خاطرمیدان میں اترنے کے لیے امپائرکے اشارے کے منتظر ہیں

17 رنز پر پاکستان کی پہلی وکٹ گر گئی۔ امام الحق 2 رنز بنا کر وکٹوں کے پیچھے کیچ آﺅٹ ہوئے
35 کے مجموعے پر فخر زمان بھی آندرے رسل کی گیند پر بولڈ ہو گئے، انہوں نے 22 رنز کی اننگز کھیلی
حارث سہیل بھی صرف 8 رنز بنا کر آندرے رسل کی گیند پر وکٹوں کے پیچھے کیچ آئوٹ ہوئے
پاکستان نے 10 اوورز کے اختتام پر تین وکٹوں کے نقصان پر 45 رنز بنا لیے
پاکستانی ٹیم کی ریڑھ کی ہڈی سمجھے جانے والے بابراعظم بھی وکٹوں سے باہر جاتی گیند کو کھیلنے کی کوشش میں وکٹوں کے پیچھے کیچ آئوٹ ہو گئے، انہوں نے 33 گیندوں پر 22 رنز کی اننگز کھیلی
75 کے مجموعی اسکور پر قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد بھی 8 رنز بنا کر وکٹوں کے پیچھے کیچ آئوٹ ہو گئے
عماد وسیم ایک رن بنا کر آئوٹ ہوئے جب کہ شاداب خان بغیر کوئی رن بنائے آئووٹ ہوئے، حسن علی بھی ایک رن کے مہمان ثابت ہوئے
تجربہ کار بلے باز محمد حفیظ بھی 16 رنز بنا کر کیچ آئوٹ ہو گئے
پاکستان کے آخری آئوٹ ہونے والے کھلاڑی وہاب ریاض تھے جنہوں نے 11 گیندوں پر 18 رنز کی اننگز کھیلی
یوں پاکستان کی پوری ٹیم 21.4 اوورز میں 105 رنز پرڈھیر ہوگئی۔ فخر زمان اور بابر اعظم 22، 22 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے، پاکستان کے بقیہ 7 کھلاڑی دہرا ہندسہ عبور کرنے میں بھی کامیاب نہیں ہو سکے ۔
ویسٹ انڈیز کی جانب سے کپتان جیسن ہولڈر اور اویشن تھامس سب سے کامیاب باﺅلرز رہے جنہوں نے 3,3 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ آندرے رسل نے 2 اور شیلڈن کوٹریل نے ایک وکٹ حاصل کی۔
ورلڈ کپ 2019 میں قومی کرکٹ ٹیم اوردو مرتبہ کی عالمی چیمپئن ویسٹ انڈیز کے درمیان معرکہ آ رائی ہوئی۔ میچ ٹرینٹ برج کے گراو¿نڈ میں کھیلا گیا۔
ویسٹ انڈین بولرز نے پاکستانی بیٹنگ لائن کے پرخچے اڑا دیے، کپتان جیسن ہولڈر نے 3، تھامس نے 4 اور آندرے رسل نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ اننگز کے اختتام پر پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو جیت کے لیے 106 رنز کا ہدف دیا، یہ پاکستان کا ورلڈ کپ میں دوسرا کم ترین اسکور ہے۔
میچ سے قبل ناٹنگھم میں مقیم پاکستانیوں کی بڑی تعداد اسٹیڈیم میچ دیکھنے پہنچی۔ میچ کے آغاز سے قبل پاکستانی شائقین کا جوش و خروش دیدنی تھا، پاکستانیوں نے ڈبل ڈیکر بس پر جشن منایا جبکہ پاکستان زندہ باد کے نعرے بھی لگائے۔
میچ سے قبل قومی ٹیم نے ٹرینٹ برج کے گرائونڈ میں جم کر پریکٹس بھی کی۔ میچ کے لیے بارہ رکنی ٹیم میں فخر زمان، امام الحق، بابر اعظم، محمد حفیظ، سرفراز احمد، حارث سہیل، آصف علی، شاداب خان، عماد وسیم، محمد عامر، وہاب ریاض اور حسن علی شامل تھے۔

 92کے ورلڈ کپ کی طرح اس بار بھی ویسٹ انڈیز کا پلہ بھاری رہا اورکالی آندھی نے پاکستان ٹیم کو 7 وکٹوں سے شکست دے دی

92کے ورلڈ کپ کی طرح اس بار بھی ویسٹ انڈیز کا پلہ بھاری رہا اورکالی آندھی نے پاکستان ٹیم کو 7 وکٹوں سے شکست دے دی

ٹاس جیتنے کے بعد ویسٹ انڈیز کے کپتان جیسن ہولڈر کا کہنا تھا کہ جلد وکٹیں لینے کی کوشش کریں گے، پہلے سے انگلینڈآ کر تیاری کا اچھا موقع ملا۔
قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ناٹنگھم کی پچ کا اندازہ ہے، ٹاس جیت جاتے تو ہم بھی بولنگ کا ہی فیصلہ کرتے۔ ورلڈ کپ سے پہلے بلے بازوں کا فارم میں آنا خوش آئند ہے۔
ماہرین کے مطابق ہوم گرائونڈ پر انگلش ٹیم بڑا خطرہ ثابت ہوسکتی ہے، میزبان کے سیمی فائنل میں پہنچنے کے امکانات پر بھی بات ہو رہی ہے۔

Facebook Comments