شمالی وزیرستان میں دھماکا،3 افسران اور ایک لانس حوالدار سمیت 4 عہدیدار شہید اور 4 زخمی ہو گئے

شمالی وزیرستان میں دھماکا،3 افسران اور ایک لانس حوالدار سمیت 4 عہدیدار شہید اور 4 زخمی ہو گئے
شمالی وزیرستان کے علاقے خاڑ کمر میں سڑک کے کنارے نصب بم دھماکے میں فوجی گاڑی نشانہ بنی جس سے شہادتیں ہوئیں،آئی ایس پی آر
شمالی وزیرستان میں شہید ہونے والے افسران میں گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کے علاقے کریم آباد سے تعلق رکھنے والے لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ، کراچی کے میجر معیز مقصود بیگ، خیبر پختونخوا کے علاقے لکی مروت کے کیپٹن عارف اللہ اور پنجاب کے علاقے چکوال سے تعلق رکھنے والے لانس حوالدار ظہیر شامل ہیں
خیبر پختونخوا میں ضم ہونے والے قبائلی ضلع شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں نے پاک فوج کی گاڑی کو نشانہ بنایا جہاں دھماکے کے نتیجے میں 3 افسران اور ایک لانس حوالدار سمیت 4 عہدیدار شہید اور 4 زخمی ہو گئے۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) سے جاری بیان کے مطابق شمالی وزیرستان کے علاقے خاڑ کمر میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں فوجی گاڑی نشانہ بنی جس سے شہادتیں ہوئیں۔
آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ شہید افسران میں گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کے علاقے کریم آباد سے تعلق رکھنے والے لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ، کراچی سے تعلق رکھنے والے میجر معیز مقصود بیگ، خیبر پختونخوا کے علاقے لکی مروت سے تعلق رکھنے والے کیپٹن عارف اللہ اور پنجاب کے علاقے چکوال سے تعلق رکھنے والے لانس حوالدار ظہیر شامل ہیں۔
آئی ایس پی آر کے مطابق یہ وہی جگہ ہے جہاں سیکیورٹی فورسز نے سرچ آپریشن کیا تھا اور چند سہولت کاروں کو گرفتار کرلیا تھا۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے اپنے بیان میں کہا کہ گزشتہ ایک ماہ کے دوران اس واقعے کے شہدا سمیت سیکیورٹی فورسز کے 10 اہلکار شہید اور35 زخمی ہوگئے ہیں۔
وزیراعظم عمران خان نے شمالی وزیرستان میں پیش آنے والے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ٹویٹر میں جاری اپنے بیان میں کہا کہ شمالی وزیرستان کے علاقے خڑکمر میں دہشت گردوں کے نصب کردہ بم کے دھماکے سے 3 افسران اور ایک سپاہی کی شہادت کا سن کر گہرا دکھ ہوا۔ اپنے تعزیتی بیان میں انہوں نے کہا کہ ‘شہدا کے اہل خانہ سے تعزیت کرتا ہوں اور زخمیوں کی صحت یابی کے لیے دعاگو ہوں۔

 شہید افسران میں گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کے علاقے کریم آباد کے لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ، کراچی کے میجر معیز مقصود بیگ، خیبر پختونخوا کے علاقے لکی مروت کے کیپٹن عارف اللہ اور پنجاب کے علاقے چکوال سے تعلق رکھنے والے لانس حوالدار ظہیر شامل ہیں

شہید افسران میں گلگت بلتستان کے ضلع ہنزہ کے علاقے کریم آباد کے لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ، کراچی کے میجر معیز مقصود بیگ، خیبر پختونخوا کے علاقے لکی مروت کے کیپٹن عارف اللہ اور پنجاب کے علاقے چکوال سے تعلق رکھنے والے لانس حوالدار ظہیر شامل ہیں

وزیراعظم نے سپاہیوں کی قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ ‘میں اپنے سپاہیوں کی قربانیوں اور بہادری پر ان کا سلیوٹ کرتا ہوں اور پوری قوم ان کے پیچھے کھڑی ہے۔
آئی ایس پی آر کا کہنا تھا واقعے کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن کا آغاز کر دیا ہے۔
خیال رہے کہ عید کے دوسرے روز بلوچستان کے ضلع ہرنائی میں دہشت گردوں کے حملے میں پیڑولنگ پر مامور 2 سیکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے تھے۔
آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق شہید ہونے والوں میں 23 سالہ سپاہی یار محمد کا تعلق ضلع سبی اور 19 سالہ سپاہی مہتاب خان کا تعلق خبیر پختونخوا کے علاقے لکی مروت سے تھا۔
خاڑ کمر واقعے میں زخمی ہونے والے 4 فوجیوں کو طبی امداد کی فراہمی کےلئے اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

Facebook Comments