شمالی وزیرستان میں آپریشن،9دہشت گردہلاک، 1افسر6 جوان شہید

کیپٹن جنید،حوالدارعامر،حوالدارعاطف،حوالدارناصر،حوالدارعبدالرزاق،سپاہی سمیع،سپاہی انورجامع شہید ہوئے،ترجمان

شخصیات ویب ڈیسک

اسلام آباد،سیکیورٹی فورسز نے شمالی وزیرستان میں خفیہ معلومات کی بنیاد پر کیئے گئے آپریشن کے دوران 9 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا،فائرنگ کے تبادلے میں کیپٹن سمیت 7جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ترجمان کے مطابق آپریشن ردالفساد کے تحت سیکیورٹی فورسز نے شمالی وزیرستان میں غرلمئی اورسپیرہ کنڑ الگڈ میں خفیہ معلومات کی بنیاد پرآپریشن کیا۔اس علاقے میں دہشت گردوں کے ایک گروپ کی موجودگی اورایک کمپاونڈ میں چھپنے کی اطلاعات تھیں ۔آپریشن کے دوران 9 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا اورانکی لاشوں کو تحویل میں لے لیا گیا،شدید فائرنگ کے تبادلے میں 7 فوجی جوان بھی جام شہادت نوش کرگئے جن میں ایک افسر بھی شامل ہے۔ترجمان کے مطابق جن جوانوں نے جام شہادت نوش کیا ان میں کیپٹن جنید،حوالدارعامر،حوالدارعاطف،حوالدارناصر،حوالدارعبدالرزاق ،سپاہی سمیع اورسپاہی انورشامل ہیں۔ترجمان نے بتایا کہ علاقے کو کلیئر کروالیا گیا ہے اور ہلاک ہونے والے دہشت گردوں کی شناخت کا عمل جاری ہے۔علاوہ ازیں سیکیورٹی فورسز نے باجوڑ میں دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بنادیا۔ذرائع کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے تحصیل ماموند کے پہاڑی علاقہ گٹ آگرہ میں کارروائی کے دوران عسکریت پسندوں کی جانب سے ضلع میں دہشت گردی کا بڑا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے ایک خود کش بمبار سمیت دو دہشت گرد ہلاک کیا۔ذرائع کے مطابق مارے جانے والے دہشت گردوں میں کالعدم تحریک طالبان باجوڑ کے نائب آپریشنل کمانڈرجس کا تعلق دواگئی تحصیل لوئی ماموند سے ہے شامل ہے جس نے خود کش جیکٹ پہنا ہوا تھا۔ذرائع کے مطابق مذکورہ کمانڈر کا شمارسب سے زیادہ مطلوب عسکریت پسندوں میں ہوتا تھا جو مختلف سماج دشمن سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ لوگوں سے طالبان کے نام پر بھتہ لینے،مختلف علاقوں میں بم دھماکوں اوردیگر دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث رہاہے۔ دوسرے دہشت گرد کی شناخت نہیں ہوسکی ۔کاروائی کے دوران مارے جانے والے دہشتگردوں کے قبضے سے ایک خود کش جیکٹ،تین پستول،نوایم ایم کے تیس کارتوس،ایک موبائل فون اورایک عدد ٹارچ شامل برآمد کی گئی ہے۔

Facebook Comments

POST A COMMENT.